EUROPEHeadlineDailyNews

UK considers opening citizenship ‘path’ for 300,000+ Hong Kong residents

ہانگ کانگ کے شہریوں کو برطانوی شہریت دینے کے بیان

لندن (نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ)۔چین نے کہا کہ برطانوی حکومت کی جانب سے اپنی سابق کالونی کا پاسپورٹ رکھنے والے 3 لاکھ افراد کو شہریت دینا بین الاقوامی قانون کے منافی ہوگا، چین کی پارلیمنٹ نے گزشتہ دنوں بغاوت سے متعلق قانون کی منظوری دی ہے سفیروں اور تاجروں کو خدشہ ہے کہ اس قانون سے ہانگ کانگ کی نیم خود مختار حیثیت اورعالمی مالی حب کی اس کی حیثیت ختم ہوجائے گی، برطانیہ،امریکہ ،آسٹریلیا اورکینیڈا نے جمعرات کواس کی مذمت کی ہے، اور برطانوی وزیر خارجہ ڈومنک راب نے بیجنگ پر زور دیا ہے کہ وہ اس فیصلے کو واپس لے۔ڈومنک راب نے کہا کہ اگر چین نے مجوزہ قانون ختم نہ کیا تو برطانیہ ہانگ کانگ کے برطانوی پاسپورٹ رکھنے والے غیر ملکی برطانوی قومیت رکھنے والے ان کم وبیش 300,000 افراد کو برطانیہ میں 6ماہ کے بجائے12ماہ قیام کی اجازت دے گااور ان کو برطانیہ میں12ماہ تک ملازمت کرنے اور تعلیم حاصل کرنے اجازت دے گا جو کہ مستقبل میں شہریت فراہم کرنے کاراستہ ہے

London. The UK government is mulling giving greater visiting rights to certain Hong Kong residents, unless the Chinese government suspends a controversial proposed national security law. Such a move could make it easier for those residents to one day apply for UK citizenship.

The offer would apply only to Hong Kongers who possess a document known as the British National Overseas (BNO) passport, which was granted to residents who registered for it prior to Britain handing Hong Kong back to China in 1997.
More than 314,000 BNO holders reside in the semi-autonomous territory, according to the Home Office. Their status currently entitles them to seek consular assistance from the UK, but is not equivalent to British citizenship.

Show More

Related Articles

Back to top button
Close