UKHeadlineDailyNews

London; Adil Kayani easyJet passenger claims he was racially profiled by airline staff who burst in on him while he used the toilet during a flight

برٹش پاکستانی نوجوان کا ایزی جٹ کے عملے پر عزت مجروح کرنے کا دعوی ، عملے کی جانب سے معافی اور پانچ سو پاؤنڈ کی پیشکش

برمنگھم کے رہائشی پینتیس سالہ عادل کیانی جو کے مراکش سے مانچسٹر کا سفر ایزی جٹ ایئر لائن پر کر رہا تھا دوران فلائٹ عادل کیانی ٹائلٹ استعمال کرنے کے لیے گیا تو عملے کے ایک شخص نے دھکا مار کر دروازہ کھول کر اندر داخل ہو گیا جس پر عادل کیانی نے اس عملےکے شخص کو باہر جانے کا کہا ۔ عادل کیانی نے دعوی کیا کے عملے نے میری عزت مجروح کی ہے جبکہ عملے کا دعوی ہے کے مسافروں کی سیکیورٹی کے پیش نظر ایسا کیا کیونکہ پندرہ منٹ تک عادل باہر نہیں آیا تو وہ اسکی سیکیورٹی کے لیے پریشان تھے عادل کیانی نے عملے کے دعوی کا رد کرتے ہوئے کہا کے وہ پانچ منٹ سے اندر تھا مگر میری رنگت کی وجہ سے ایسا کیا گیا ۔ ائیر لائن کے عملے نے عادل کیانی سے معافی بھی مانگی اور پانچ سو پاؤنڈ کی پیشکش بھی کی جسے مسافر عادل کیانی نے رد کرتے ہو کہا کے جس شخص نے دروازہ کھولا وہی آ کر معافی مانگے ۔

London; Adil Kayani easyJet passenger claims he was racially profiled by airline staff who burst in on him while he used the toilet during a flight because he spent too long in the cubicle.

Adil Kayani, 35, was left red-faced when a flight attendant barged in on him whilst he was sat on the loo, with his trousers around his ankles.

EasyJet said staff did it for “safety and security reasons” after Mr Kayani had been in the lavatory for more than 15 minutes.

However, Mr Kayani said he was mortified and was left “exposed” after the male staff member unlocked the door from the outside, two hours into a flight from Marrakesh.

The 35-year-old, a food wholesaler from Birmingham, said: “There was a heavy knock on the door. I shouted ‘I’ll be out soon hold on a minute’.

 Mr Kayani claims he was offered a £500 goodwill gesture but refused it

 

Show More

Iftikhar Warsi

Tel 0044-7445881151

Related Articles