EUROPEHeadlineDailyNews

London; Pakistani taxi driver Abid Mustafa grateful for global community support after racist attack

پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور نسل پرستانہ حملہ پر گلوبل کمیونٹی کی سپورٹ پر شکرگزار

لندن (نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ)۔ برٹش پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور عابد مصطفیٰ جسے اس کے ایک مسافر نے نسل پرستانہ زیادتی کا نشانہ بنایا تھا، اس نے گلوبل کمیونٹی کی جانب سے خود کو سپورٹ کرنے اور پرسکون ردعمل کی تعریف پر شکریہ ادا کیا ہے۔ نسل پرستی پر مبنی یہ وڈیو ٹیوٹر پر جاری ہوئی تھی جسے ایک ملین دفعہ دیکھا گیا، وڈیو میں ایک سفید فام عابد مصطفیٰ سے قابل اعتراض انداز میں گفتگو کرتے ہوئے کہہ رہا ہے کہ یہ انگلینڈ ہے، تم پاکستان کو کوئی خاص چیز سمجھتے ہو، اس بات پر کوئی حیرت نہیں ہوگی کہ انڈینز تم پر بمباری کردیں گے۔ 52 سالہ مسافر جسے اب گرفتار کر لیا گیا ہے ، اس نے عابد مصطفیٰ کو اسلامو فوبک اور نسلی زیادتی کا نشانہ بنایا ، مگر عابد مصطفیٰ پرسکون رہا اور اسے متنبہ کیا کہ وہ سوشل میڈیا پر یہ ویڈیو اپ لوڈ کر دے گا۔ وڈیو حملہ سے یہ بات واضح ہے کہ مسافر نے درست طور پر عابد مصطفیٰ کو بطور پاکستانی اور مسلم شناخت کر کے اس کو زبانی حملے کا نشانہ بنایا۔ وزیراعظم عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائما گولڈ سمتھ نے اس واقعہ کے دوران پرسکون رہنے پر ڈرائیور کی تعریف کی۔ انہوں نے اپنے ٹیوٹ پیغام میں کہا کہ ’’ شاباش ، پاکستانی برٹش کیب ڈرائیور کی جانب سے بےہودہ انداز میں نسل پرستانہ جملوں کے ردعمل میں پرسکون رہنا قابل احترام ہے۔

LONDON: British Pakistani taxi driver Abid Mustafa who suffered racist abuse by one of his passengers has thanked the global community for supporting him and appreciating his calm response.

The racist video released on Twitter, that has been viewed over a million times, shows a white male saying: “This is England, we’ll blow you out the f***king water.. you think you’re something special – Pakistan? No wonder the Indians are bombing you”.

The 52-year-old passenger who has now been arrested hurled Islamophobic and racist abuse to Abid Mustafa who calmly handled the situation and warned the passenger that he would upload the video on social media. Its clear from the attack video that the passenger correctly recognized Abid Mustafa as a Pakistani and Muslim and then launched the verbal assault.

The ex-wife of Prime Minister Imran Khan, Jemima Goldsmith commended the driver for keeping calm during the incident. She tweeted, “Shabash & respect to this Pakistani-British cab driver keeping his cool in the face of unspeakable racist abuse from a grotesque thug.”

Show More

Related Articles

Back to top button
Close