KahutaHeadlineDailyNews

Kahuta; Chinese man marries to a lady in Kahuta after much published marriage of Chinese men and Pakistani women

ہمسایہ ملک چین کے باشندے سے شادی کا کیس کہوٹہ میں بھی سامنے آگیا

ہمسایہ ملک چین کے باشندے سے شادی کا کیس کہوٹہ میں بھی سامنے آگیا۔ تحصیل کہوٹہ کے گاؤ ں جنڈی کی رہائشی سلمیٰ نامی خاتوں نے چین کے باشندے مسٹر ووگینگ  سے (24) مارچ کو شادی کی اور اس کا اسلامی نا م محمد امان رکھا۔ تفصیل کے مطابق ملک بھر کی طرح تحصیل کہوٹہ میں چینی باشندے سے شادی کا ایک کیس سامنے آیا ہے۔ یہ شادی (24) مارچ 2019کو اسلام آباد کے تندوری ریسٹورینٹ میں انجام پائی۔ چینی باشندے سے شادی کرنے والی خاتون سلمیٰ بی بی کا تعلق کہوٹہ کے علاقہ جنڈی سے ہے۔ اس کے والد کا نام ارشد محمود ہے جبکہ جبکہ پوسٹ آفس ہنیسر سے۔ یاد رہے کہ ایف آئی اے اوع حساس ادارے نے شادی گینگ کے خلاف کاروائی کے لیئے پنجاب بھر میں چھاپے مارے ہیں۔ اور کاروائیاں تیز کردی ہیں۔ غریب گھرانوں کی خواتین کو بھاری رقم کے عوض سنہرے خواب کا جھانسہ دیکر سہولت کاروں اور شادی بیورو آفس والوں کے خلاف ایکشن لینے کے لیئے حساس اداروں سمیت قانون نا کرنے والے ادارے حرکت میں آچکے ہیں۔

Kahuta; Chinse men getting married to Pakistani national girls a much published in last few days has brought home more news in Pothwar region. Chinese man Wu Gang has married Salma Bibi of village Jandi.

Wu Gang converted to Islam and was named Mohammad Iman and the marriage has taken place at Tandoori restaurant in Islamabad on 24th March.

According to media reports, The Pakistan government has warned people against a mafia involved in ‘fake’ marriages of Chinese men with Pakistani girls.

The Chinese Embassy in Islamabad has issued a statement urging caution against unlawful matchmaking centres involved in these marriages to earn profit.

According to reports, the Pakistan government has launched a crackdown on the illegal matchmaking centres. They lure poor Pakistani girls, to marry Chinese men who are either visiting or working in Pakistan.

They produce fake documents of Chinese men showing them either as Christians or Muslims. They then find poor girls to marry them by offering money and promises of ‘good life’. However, many girls reportedly became victims of human trafficking and forced into prostitution.

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *