DailyNews

Election commission announce party election symbols

الیکشن کمیشن نےعام انتخابات 2018 کیلئےسیاسی جماعتوں کو انتخابی نشانات الاٹ کر دیئے

الیکشن کمیشن نےعام انتخابات 2018 کیلئےسیاسی جماعتوں کو انتخابی نشانات الاٹ کر دیئے ہیں، مسلم لیگ (ق)سائیکل کے بجائے ٹریکٹر کے نشان پرالیکشن لڑیگی،پاکستان پیپلز پارٹی کو تلوار، پیپلز پارٹی پارلیمنٹرین کو تیر ، مسلم لیگ ن کو شیر، پی ٹی آئی کو بلا، جماعت اسلامی کا ترازو ،نیشنل پارٹی کو آری کا نشان الاٹ کیا گیا ، ایم کیو ایم کے پتنگ سمیت 71 سیاسی جماعتوں کے انتخابی نشانات برقرار ہیں، تلوار، پگڑی، درانتی، آری اور ستارہ کے نشان پر تنازع کا فیصلہ ہو گیا،پاکستان پیپلز پارٹی اور پیپلز پارٹی ورکرز کے درمیان تنازع تلوارکےنشان کا تھا، الیکشن کمیشن کے فیصلےکے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کو انتخابی نشان تلوار الاٹ کردیاگیا، پاکستان عوامی لیگ کو ہاکی، پاکستان تحریک انسانیت کو کنگھی، متحدہ قبائل پارٹی کو پگڑی،عوام لیگ کو انسانی ہاتھ بطورانتخابی نشان الاٹ کیا گیا ،بلوچستان نیشنل موومنٹ کو درانتی ، ڈیمو کریٹک الائنس کو ستارہ ،نیشنل پارٹی کو آری کا نشان مل گیا ،مسلم لیگ ق اپنے

انتخابی نشان سے دستبردار ہو گئی۔ ان کی درخواست پر ٹریکٹر کا نشان الاٹ کر دیا گیا ،الیکشن کمیشن کے مطابق 71 سیاسی جماعتوں کے انتخابی نشانات کی درخواست پر تنازع نہیں، جسکے تحت مسلم لیگ کا انتخابی نشان شیر برقرار، پی ٹی آئی کا انتخابی نشان بلا ،جماعت اسلامی کا ترازو ،پیپلز پارٹی پارلیمنٹرین کا انتخابی نشان تیر، عوامی نیشنل پارٹی کا نشان لالٹین ،عوامی مسلم لیگ کا قلم دوات برقرار ہے۔جبکہ ایم ایم اے کو کتاب کا نشان الاٹ کردیا گیا۔

 

The commission allotted the lion symbol to Pakistan Muslim League – Nawaz, bat to Pakistan Tehreek-e-Insaf, arrow and sword to Pakistan Peoples Party, kite to Muttahida Qaumi Movement, book to Muttahida Majlis-e-Amal, scale to Jamaat-e-Islami, lantern to Awami National Party and pen and inkpot to Awami Muslim League. The commission allotted the star symbol to the Grand Democratic Alliance.

It also announced its reserved verdict on the PPP’s plea to have both arrow and sword symbols. The party will decide which of the two symbols it will use to contest the upcoming election.

On the other hand, Pakistan Muslim League – Quaid said it wanted to contest the upcoming election with the tractor symbol instead of bicycle. Pakistan Kissan Ittihad also wants the tractor symbol. The Election Commission reserved its verdict on both the pleas.

The general election is scheduled for July 25 onwards. The current government dissolves on May 31, after which a caretaker setup will take over the affairs of the country and hold the next election. Justice Nasirul Mulk, a former Chief Justice, will be the caretaker PM.

Show More

Related Articles