todays news آج کی خبریں

  • Kallar Syedan; Police charge two men in Kanoha for protecting two wanted criminals

    کلر سیداں (اکرام الحق قریشی) کلر سیداں پولیس نے دو اشتہاری مجرمان منصور شفاعت اور ناصر شفاعت سکنہ بنک چوک کنوہا کو پناہ دینے کے الزام میں مسمیان طارق محمود اور عمر دراز کیخلاف مقدمہ درج کر لیا۔گرفتاری سے بچنے کیلئے وہ بھی رات کی تاریکی کا فاہدہ اٹھاتے ہوئے قریبی جنگل میں فرار ہو گئے۔

    Kallar Syedan; Kallar Syedan police have charged Tariq Mahmood and Umar Daraz for knowingly keeping wanted criminals Mansoor Shafat and Nasir Shaffat and helping them get away.

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    کلر سیداں پولیس فردوش نامی منشیات فروش کے قبضے سے 10 لیٹر شراب برآمد

    Bilawal Amjad arrested in possession of alcohol in village Daryal

    کلر سیداں (اکرام الحق قریشی)کلر سیداں پولیس فردوش نامی منشیات فروش کے قبضے سے 10 لیٹر شراب برآمد کر کے مقدمہ درج کر لیا۔پولیس گشت پر تھی کہ اسی دوران ایک شخص پیکاں روڈ پر پیدل ہاتھ میں گیلن پکڑے جا رہا تھا جسے چند قدموں کے فاصلے پر قابو کر لیا گیا۔دریں اثناء پولیس نے ایک اور کارروائی میں بلاول امجد سکنہ ڈریال کے قبضہ سے ناجائز اسلحہ پسٹل 32 بور بمعہ تین روند برآمد کر کے مقدمہ درج کر لیا۔ملزم ناجائز اسلحہ کے بارے میں کوئی لائسنس پیش نہ کر سکا۔

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    اسسٹنٹ کمشنر کلر سیداں امبر گیلانی نے کلر سیداں شہر میں گرانفروشوں کیخلاف کارروائی

    Ambar Gillani takes action against traders selling goods above set rates

    کلر سیداں (اکرام الحق قریشی) اسسٹنٹ کمشنر کلر سیداں امبر گیلانی نے کلر سیداں شہر میں گرانفروشوں کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے سبزی و فروٹ فروشوں کو14 ہزار روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کر دیا۔تحصیلدار کلر سیدا ں وسیم تابش جنہیں اسپیشل پرائس مجسٹریٹ کے اختیارات بھی حاصل ہیں نے 25 سو روپے جبکہہاسپیشل پرائس مجسٹریٹ میونسپل آفیسر کاشف عدنان کیانی نے سرصوبہ شاہ میں کارروائی کے دوران پانچ دکانداروں سے سات ہزار روپے کی رقم بطور جرمانہ وصول کر کے سرکاری خزانے میں جمع کرادی۔انفورسمنٹ انسپکٹر زائد حیدری بھی ان کے ہمراہ تھے۔

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    مین بازار کو بھی پیدل چلنے والوں کے لیے مشکل

    Pedestrian in Kallar bazaar still facing same fate on public paths

    کلر سیداں (اکرام الحق قریشی)کلر سیداں کی مین شاہراہ پر ریڑھی بانوں پارکنگ کرنے والی گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کے اژدھام کے بعد مین بازار کو بھی پیدل چلنے والوں کے لیے مشکل بنا دیا گیا ہے۔قبضہ مافیا نے کلر سیداں میں پنجے گھاڑ رکھے ہیں کوئی ان کو لگام دینے والا نہیں البتہ ان کے سہولت کاروں کی طویل فہرست موجود ہے۔ مین بازار جہاں سے کسی زمانے میں تھوہا خالصہ سے آ کر گوجرخان جانے والی مسافر بسیں گزرتی تھیں وہاں آج کل پیدل گزرنا بھی محال ہو چکا ہے۔دونوں اطراف دوکانوں کی سڑک میں تعمیر قصہ ماضی بن چکا ہے اور اب اس میں جا بجا ریڑھی بانوں نے قبضہ جما رکھا ہے اور پھر بازار میں داخل ہونے والی گاڑیوں اور رکشوں نے خریداری کے لیے آنے والوں کا ناک میں دم کر رکھا ہے اس ساری صورتحال میں بلدیہ اور دیگر ادارے مکمل طورپر خاموش ہیں اور خریدار سارا دن بازار میں ذلیل و رسوا ہوتے ہیں انہوں نے ڈپٹی کمشنر راولپنڈی سے فوری مداخلت کی اپیل کی ہے۔

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    شہباز بھٹی آج کل اسلام آباد کی مہران اکیڈمی میں اپنے جوہر دکھا رہے ہیں

    Shabaz Bhatti of Chak Mirza showing his football skills with Mehran academy in Islamabad

    کلر سیداں (اکرام الحق قریشی)کلر سیداں کے ہونہار کھلاڑی شہباز بھٹی آج کل اسلام آباد کی مہران اکیڈمی میں اپنے جوہر دکھا رہے ہیں شہباز بھٹی کا تعلق لکی سٹار کلر سیداں سے ہے یہ اپنے گاؤں چک مرزا کی راجپوت فٹبال کلب کے وائس کپتان بھی ہیں ان کا شمار پنجاب کے چند کامیاب کبڈی کے کھلاڑیوں میں بھی ہوتا ہے۔ان کا پورا گھرانہ مختلف کھیلوں میں ہمہ وقت مصروف نظر آتا ہے ان کے چھوٹے بھائی محمد سمیع اللہ پاکستان کی انڈر 15ٹیم میں بھی بیرون ملک پاکستان کی نمائندگی کر چکے ہیں۔شہباز بھٹی خود بھی پوٹھوہار کبڈی کلب کے بھی کپتان ہیں ان کی نشو نما میں پوٹھوہار اکیڈمی اسلام آباد کے کوچ راجہ محمد منیر کا اہم کردار ہے۔

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    حق خطیب حسین علی با د شا ہ سر کا ر نے لالہ موسی جا کر پیپلز پارٹی کے رہنما قمر ز ما ن کا ئر ہ سے ملاقات

    Pir Haq Khateeb meets with Qamar Zaman Kaira and pays condolences

    کلر سیداں (اکرام الحق قریشی)سپہ سا لا ر عقید ہ تا جد ا ر ختم نبو ت حق خطیب حسین علی با د شا ہ سر کا ر نے لالہ موسی جا کر پیپلز پارٹی کے رہنما قمر ز ما ن کا ئر ہ سے ملاقات کی اور ان کے جواں سال بیٹے کی و فا ت پر فا تحہ خو ا نی کرتے ہوئے دلی تعزیت کا اظہار کیا۔

  • Reported By: Ikram Ul Haq Qureshi

  • Kahuta; MPA Raja Sagheer Ahmed visits sasta bazaar

    صوبائی پارلیمانی سیکرٹری جیل خانہ جات راجہ صغیر احمدکا رمضان سستا بازار کہوٹہ کادورہ۔اشیائے خورد نوش کا معیار اور نرخ نامے چیک کیے۔ حکومتی احکامات پر بہترین ا سٹال لگوانے پر انتظامیہ کی طرف سے موثر اقدام کر نے پر ان کی خدمات کو سراہا۔ عوام کی خدمت ہمارا منشور ہے انشاء اللہ ملک میں ایک حقیقی تبدیلی روہنماء ہو گئی عوام کے مسائل حل کرانا اور ملک میں خوشحالی لانا ہماری حکومت کا اصل مقصد ہے۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی پارلیمانی سیکرٹری جیل خانہ جات راجہ صغیر احمد نے رمضان سستے بازار کہوٹہ کے دورہے کے موقع پرمیڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر کہوٹہ گوہر وزیر خان، تحصیلدارملک سعید احمد،پٹواری عامر محمود،سٹی ٹریفک پولیس کہوٹہ کے اہلکار محمد عمران، سول ڈیفنس کہوٹہ کے عبد الشکور کھٹڑ، راجہ ثقلین آف ممیام اور سردار شاہد محمود بھی ہمران موجود تھے۔ راجہ صغیر احمدنے وہاں لگائے گے سبزی، فروٹ، چینی، آٹا، دالیں، مرغ، گوشت اور دیگر سٹالوں پر گے اشیائے خوردونوش کا معیاراور ان کے نرخ نامے چیک کیے حکومتی احکامات پر بہترین ا سٹال لگوانے پر انتظامیہ کی طرف سے موثر اقدام کر نے پر ان کی خدمات کو سراہا۔  مٹور:نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم کبیر احمد جنجوعہ سے۔۔۔۔

      [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    کہوٹہ کے تاجروں کو بھی مبارکباد پیش

    Kahuta traders congratulated by Raja Sagheer Ahmed

    مٹور:نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم کبیر احمد جنجوعہ سے۔۔۔۔ جماعت اسلامی تحصیل کہوٹہ کے رہنما سردار محمد مسعود نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ماہ رمضان کا آج دوسرا عشرہ ختم ہو رہا ہے اس ماہ میں کہوٹہ کی انتظامیہ اورتاجروں کا رویہ عوام کے ساتھ مناسب رہا  اسسٹنٹ کمشنر کہوٹہ گوہر وزیر خان نے اپنی ٹیم کے دیگر ارکان تحصیلدارملک سعید احمد،پٹواری عامر محمود اور محکمہ پولیس کے ساتھ مل کر عوام کو تاجروں سے بھر پور ریلیف دیلایا اور اس سلسلے میں کہوٹہ تاجروں نے بھی کہوٹہ انتظامیہ اور عوام کے ساتھ بھر پور تعاون کیا میں اسسٹنٹ کمشنر کہوٹہ گوہر وزیر خان،تحصیلدارملک سعید احمد،پٹواری عامر محموداور دیگر ارکان کی خدمات کو سراہتے ہوئے خراج تحسین پیش کر تا ہوں اور کہوٹہ کے تاجروں کو بھی مبارکباد پیش کر تا ہوں انہوں نے کہا یہ رحمتوں بر کتوں کا ماہ ہوتا ہے جو اس مقدس ماہ کو پاتے ہیں وہ خوش نصیب ہوتے ہیں اس لیے ہمیں چاہیے کہ اس ماہ میں زیادہ سے زیادہ عبادات، رضیات کریں اپنے ہاتھوں سے غریبوں، یتیموں،بے سہاروں اور بے کسوں کو صدقات دیں تاکہ اللہ پاک کی بھر پور خوشنودی حاصل کر یں۔

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    سردار لطیف کی والدہ محترمہ کو ان کے آبائی گاؤں چنور یوسی بیور میں اداکر دیا گیا

    Mother of Sardar Latif passed away in Chinor, Bior

    ٹور:نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم کبیر احمد جنجوعہ سے۔۔۔۔ سردار لطیف کی والدہ محترمہ کو ان کے آبائی گاؤں چنور یوسی بیور میں اداکر دیا گیاان کی نمازے جنازہ ممتاز عالم دین مولانا افضل رضوی نے پڑھا ہی جبکہ نمازے جناہ میں صوبائی پارلیمانی سیکرٹری جیل خانہ جات راجہ صغیر احمد، راجہ ذوالفقار علی ستی،مولانا سردار آصف القادری،سردار شفاقت حسین،سردار ایم رضا،راجہ محمد یوسف،سردار محمد قاسم سمیت کثیر تعداد سیاسی وسماجی شخصیات نے شر کت کی۔

  • Reported By: Kabir Ahmed Janjua

  • Kallar Syedan; Sahot to Arjam road concreated, MPA raja Sagheer Ahmed prised. ( See video report)

    گزشتہ دس سال کے بعد موضع سہوٹ بدال،موضع سہوٹ بگیال اور ارجام کی عوام کے ووٹ کو عزت ملی،ممبر صوبائی اسمبلی،پاکستان تحریک انصاف،صوبائی پارلیمانی سیکرٹری جیل خانہ جات راجہ صغیر احمد آف مٹور نے آٹھ ماہ کے قلیل عرصہ میں یہاں کے باسیوں کی،،ووٹ،، کو سر آنکھوں پر بیٹھا دیا،ایسی مثال پہلے ستر سالہ تاریخ میں نہیں ملتی،انسپکٹر حاجی چوہدری محمد ضمیر،حاجی چوہدری محمد رشید،حاجی چوہدری محمد سفیر،چوہدری اختر علی،چوہدری عجب خان ناروے،اخلاق بھٹی یو کے، چوہدری سجاد حسین یو اے ای،چوہدری عبد الغفار،چوہدری آفتاب احمد،سجاد جنجوعہ،چوہدری امجد ارجام اٹلی،چوہدری عمران قمر،عمران مینو لنگڑیال،چوہدری شعیب مقدم ہانگ کانگ نے عوام کا دیرنیہ اور گمبیر مسئلہ تیزترین وقت میں حل کرنے پر راجہ صغیر احمد کا دل کی اتھاہ گہریوں سے شکریہ ادا کیا، ان کوخراج تحسین پیش کرنے کے لئے جلدہی سہوٹ کلیال میں مد عو کیا جائے گا،جس میں تما م موضعات کے معززین شامل ہوں گئے،اس موقع پر حیرت انگیز اعلان متوقع ہے. سہوٹ کلیال(نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم)چوہدری الفت حسین۔

    https://youtu.be/52QdQviulqQ
  • Reported By: Ch Ulffat Hussain

  • Rawalpindi; Over 142 motorcyclist arrested in violation of riding with passenger

    موٹرسائیکل ڈبل سواری پابندی کی خلاف ورزی کے الزام میں راولپنڈی پولیس نے ایک سو بیالیس افراد کو گرفتار کرکے اکہتر مقدمات درج کرلئے۔گرفتار افراد میں زیادہ تر نوجوان شامل ہیں۔شہریوں کی شکایت ہے کہ یہ پابندی کرائم کو روکنے کے لئے لگائی گئی تھی لیکن اس کا نشانہ عام آدمی بن رہا ہے، شہریوں نے وزیراعظم عمران خان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

     
  • Reported By: admin

  • France; Eiffel tower closed for visitors

    فرانسیسی حکام نے معروف سیاحتی مرکز ایفل ٹاور کو نا معلوم شخص کی جانب سے سر کرنے کی کوشش کے بعد اسے زائرین کے لئے بند کر دیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق پیرس کے قلب میں واقع سیاحتی وثقافتی مرکز کے میڈیا سینٹر کے اعلان میں کہاگیاکہ مقامی وقت بعد دوپہر ایک نامعلوم شخص نے اس بلند ٹاور پر چڑھنے کی کوشش کی تاہم یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ نامعلوم شخص ٹاور پر کتنی بلندی تک پہنچ گیا جب اسے نیچے اتارنے کے لئے کارروائی کی گئی،پیرس پولیس کی خاتون ترجمان نے بتایا کہ فائر بریگیڈ عملے میں بلندی پر کارروائی کے لئے خصوصی طور پر تربیت یافتہ اہلکار نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر ٹاور پر چڑھنے والے شخص سے مذاکرات شروع کئے

    Paris; France’s Eiffel Tower has been closed to visitors after a person has tried to scale it. The Paris monument’s media office said the unidentified individual tried to climb up the tourist attraction on Monday afternoon.

    But it was not clear how high the trespasser managed to get.

    A Paris police spokeswoman said a team of firefighters including a climbing specialist is on the scene and in touch with the intruder, whose motivations remain unclear.

    Officials have not immediately provided further information about the incident, and it is not known when the Eiffel Tower will reopen.

  • Reported By: Naseer Raja

  • Dadyal, AJK; Ch M Azim congratulated on becoming Mayor in Birmingham by his villagers in UC Siakh

    چوہدری محمد عظیم لارڈمیئر برمنگھم بننے پر اور اپنے عہدے کا حلف اٹھاپر مبار ک باد پیش کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ اہلیاں میرپور کا ایک اور اعزاز کی بات ہے کہ برطانیہ میں مقیم پاکستانی کشمیر نژار میرپوری چوہدی محمد عظیم لارڈ میئر برمنگھم منتخب ہو کر اپنے عہدے کا حلف اٹھالیا ان خیالات کااظہار مبین حسین چغتائی ایڈووکیٹ نے ان کے بھائی چوہدری محمد حنیف کو مبارک باد پیش کی انہوں نے کہا کہ یہ ہماری بڑے اعزاز کی بات کہ چوہدری محمد عظیم لارڈ میئر برمنگھم منتخب ہو نے پر اہل علاقہ نے خوشی کی اظہا ر کیا ہے امید ظاہر کی کہ وہ اپنی مسلم کمیٹی کے مسائل حل کریں گئے انہوں مزید کہا کہ ان کا تعلق میرپور کی تحصیل ڈڈیال کی یونین کونسل سیاکھ ہے اور وہ گزشتہ کئی دہائیوں سے برطانیہ میں مقیم ہیں اور مسلسل چوتھی مرتبہ برمنگھم سٹی کونسل لبیر پارٹی کی طرف سے بھاری .اکثریت سے کونسلرمنتخب ہو چلے آرہے ہیں انہوں چوہدری محمد حنیف ایڈووکیٹ دیگر عریزاقارب مبارک باد پیش کی

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    ڈڈیال(نمائندہ خصوصی) اسسٹنٹ کمشزچوہدری اقبال حسن نے گزشتہ روز بازار کا معائنہ کیا سٹور اور دوکانوں کی پڑتال کی اور مشکوک سٹورکو سخت وارننگ دی تفصیلات کے اسسٹنٹ کمشز ڈڈیال چوہدری اقبال حسن نے ہمراہ پولیس نفری بازار کاچکر لگایا سبزی فروٹ دیگر اشیاء خوردنوش دودھ دہی،مرع،گوشت سمیت مشروبات کے مختلف سٹور ز اور دوکانوں کی پڑتال اور سخت وارننگ دی اسسٹنٹ کمشز نے کہا کہ ماہ رمضان المبارک کے تقدس کے پیش نظر دوکاندار حضرات جملہ روزمرہ اشیاء کی فروخت پرائس کنٹرول کمیٹی کی طرف سے جاری کردہ نرخ ناموں کے مطابق فروخت کریں چیکنگ کے دوران مختلف دوکانداروں پر غیر معیاری ناقص اورزائد قیمتیں وصول کرنے والوں کو جرمانے بھی کئے انہوں کہا کہ آئند کسی دوکاندار کی صافی ستھرائی نہ ہو ئی اور ریٹ لسٹ نہ آویزں نہ کرنے کو بھاری جرمانے کئے جائے گئے

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    ڈڈیال(نمائندہ خصوصی) آل جموں وکشمیر مسلم کانفرنس تحصیل صدر چوہدری اورنگزیب لکھیا نے کہا مقبوضہ کشمیر میں مظالم کی انہاہو گئی مقبوضہ کشمیر میں بھارت فوج اس طرح سے مظالم ڈھائے رہی ہے کہ جیسے وہ دشمن ملک کے باشدہ ہیں انشاء اللہ بہت جلد کشمیر آزاد ہو گا ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے گزشتہ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہو ئے انہوں نے کہا کہ بھارت میں الیکشن انتہا پسند وں کا غلبہ بر قرار کیونکہ مودی نے میدان پھر مار لیا ہے چوہدری اونگزیب لکھیا نے کہا بھارتی فوج مقبوضہ میں لاقانونیت،ظلم وجبر کی انتہا کر دی گئی اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی اس با ت کا لینے چاہے

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    ڈڈیال(نمائندہ خصوصی) معصوم فرشتہ کے قاتلوں جلداز جلد سخت سزادی جائے ایک جلاس ہو ا جس کی صدارت صد ر ڈڈیال پریس کلب داکٹر محمد اسحاق نے کی انہوں کہا کہ ہم حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ کہ وہ فرشتہ کے قاتلوں سخت سے سخت سزا دی اس موقع پر یونین آف جنرنلسٹ کے ضلع میرپور کے نائب صدرحکیم طارق حسین نے کہا ماہ رمضان کے ماہ میں قانون بھی حرکات میں نہ آنے کس قدر شرم کی بات ہے پاکستان کے قاتلوں اور ہو س کے پجاریوں کی آماجگابن چکا ہے کیا وزیراعظم پاکستان عمران خان مدنیہ ریاست میں کمسن بچیوں کے ساتھ زیاتی اور تشدد کے وقعات سامنے آرہے ہیں اس سلسلے میں قوانین سخت کر نے کی ضرورت ہے تاکہ ان درندوں کو عبرت کا نشان بناجاسکے آخر میں صدر پر یس کلب ڈاکٹر محمد اسحاق نے زور دیا کہ واقعہ میں ملوث افراد کو کڑی سے کڑی سزا دی جائے

    [divider style="solid" top="20" bottom="20"]

    ڈڈیال(نمائندہ خصوصی) ماسٹر عبدالمالک بٹ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ حکومت کو اپنے کئے ہو وعدے کے مطابق پرائمری اساتذہ کو B-14اور جونیئر اساتذہ کو B-16عطاکئے جائیں اب پرائمری اساتذہ کو بی اے بی ایڈاور جو نیئر ایم اے بی ایڈے ہیں اور اسکے علاوہ N.T.Sبھی پاس کر کے آئے ہیں اسلئے حکومت سے گزارش ہے کہ وہ آنے والے بجٹ میں ہر حال میں اساتذہ کے اپ گریڈیشن کا نوٹیفیکشن جاری کرے اسی طرح سے وزیراعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ آپ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں خاطر خواہ اضافہ پچھلے تین سالوں کے ایڈ الاؤ ئسنزبنیادی تنخواہوں میں ضم کر کے سکیل ایوائٹزکریں کیونکہ مہنگائی بہت زیادہ بڑھ ہو چکی ہے اور کم تنخواہوں ہو نے کی سے ہم اپنے بچوں کو روٹی نہیں دے سکتا ہیں اب ساتذہ کرام کے پاس سٹرکوں پر آنے کے علاوہ.کوئی باقی چار نہیں لہذابجٹ سے پہلے گریڈاپ کئے جائیں اور خاطر خوا ہ اصافہ کی جائے

  • Reported By: Waqar Ahmed

  • Chakswari, AJK; Region of Adh Palahi, Ludar Painda in major crisis in development

    چکسواری کے نواحی علاقہ آدھ پلائی لدڑپینڈا کے مسائل تحر یر: حافظ شہریاربسمل

    چکسواری سے تقریبا ڈیڑھ کلومیٹرفاصلہ پرواقع چیچیاں چوک لڈرپینڈاروڈ برساتی نالہ ہے جس میں بارش سے پانی جمع ہوجاتاہے اورشدیدسفری مشکلات کاباعث بنتاہے طویل عرصہ سے اس علاقہ کے عوام کوشدیدسفری مشکلات کاسامناکرناپڑتاہے باالخصوص موسم برسات میں شدیداورطوفانی بارشوں کے دوران اس نالہ میں بڑی طغیانی ہوتی ہے اورکئی گھنٹوں تک اس علاقہ کے لوگوں کارابطہ دیگرعلاقوں باالخصوص چکسواری سے کٹ جاتاہے کئی کئی گھنٹے ٹریفک بندہوجاتی ہے اورپیدل چلنے والے لوگ بھی سڑک کے آرپارکھڑے رہتے ہیں طغیانی کازور کم ہوتاہے وہ ادھر ادھر جاسکتے ہیں اس علاقہ کایہ بہت بڑامسئلہ ہے کچھ عرصہ پہلے اس مقام پربرسات میں شدیدطغیانی سے گہرانالہ بن جاتاہے جس سے سڑک بندہوجاتی تھی نالہ پرحفاظتی دیوار کی تعمیر سے راستہ قابل سفررہتاہے مگراس مسئلہ کاپائیدار اورمستقل حل اس جگہ پرپلی کی تعمیر اشدضروری ہے معمولی سی بارش سے یہ پانی جمع ہوجاتاہے اورپتھراورمٹی جمع ہوجاتی ہے اورہروقت کیچڑجمع رہتاہے جس سے شدیدسفری مشکلات پیداہوتی ہیں منگلاڈیم توسیعی منصوبے سے پہلے ایک بڑی آبادی کاواحدراستہ تھایہ قدیم تاریخی چومکھ میرپورروڈ ہے جس پرڈڈیال چکسواری اوردیگرعلاقوں کے لوگ اس قدیم تاریخی سڑک پرگزر کرپرانے شہرمیرپور جایاکرتے تھے بہت ہی مصروف اوراہم شاہراہ تھی اب اس تاریخی روڈ کی حالت بہت ناگفتہ بہ ہے منگلاڈیم توسیعی منصوبے کے باعث متاثرین کے انخلاء کے باوجود اب بھی دوتین گاؤں اب بھی موجود ہیں دوتعلیمی ادارے ہیں ان میں گورنمنٹ مڈل سکول آدھ پلائی اورگورنمنٹ گرلزپرائمری سکول آدھ پلائی شامل ہیں تین پرانے بھٹ خشت بھی ہیں جن سے لوگوں کاکاروبار وابستہ ہے بھٹہ خشت کے وجہ سے بڑاکاروبار ی علاقہ ہے مجموعی طورپراس علاقہ میں سات آٹھ اینٹوں کے بھٹے ہیں بڑی تعداد میں مزدورطبقہ ان بھٹہ خشت پرکام کرتاہے سڑک کی حالت بھی بہت خستہ حالی ہے سڑک کی ناگفتہ بہ حالت کی وجہ سے ہروقت گردوغبار اڑتارہتاہے اس علاقہ میں فضائی آلودگی ایک بڑامسئلہ ہے جس سے سانس کی بیماریاں جنم لیتی ہیں سڑک کچی ہے گردوغبار کی وجہ سے اس ایریاکی فضاہروقت آلودہ رہتی ہے پھرٹریکٹرٹرالیوں اورمقامی ٹریفک بھی گرداڑاتی ہے پیدل چلنامحال ہوجاتاہے صرف بارش کے دوارن دھول جم جاتی ہے مگرپھرکیچڑ ہوجاتاہے اس علاقہ کے عوام کی زندگی ایک عذاب بن گئی ہے سڑک کچی بے تحاشا آلودگی اورپھربرساتی نالہ پرپلی کی عدم تعمیر بھی ایک بڑامسئلہ ہے موسم برسات میں اس نالہ پرپلی نہ ہونے کی وجہ سے بارش کے پانی کے سیلاب کے باعث سکول کے طلبہ وطالبات نہیں جاسکتے ان کی پڑھائی کاشدیدنقصان ہوتاہے اگروہ جانابھی چاہیں توطغیانی کی وجہ سے انہیں شدیدجانی نقصان کااندیشہ ہوتاہے بچے نالہ کے سیلابی پانی میں بہہ سکتے ہیں اورشدیدجانی نقصان کاخطرہ رہتاہے اس علاقہ کے عوام طویل عرصہ سے شدیدفضائی آلودگی کے ساتھ ساتھ اس نالہ پرپلی نہ ہونے کی وجہ سے شدیدترین سفری مشکلات کاشکار ہیں عوامی نمائندگی کادعوی کرنے والے توبہت ہیں لیکن اس علاقہ کے عوام کاحق کون اداکرے گایہ سطور لکھنے کامقصد کسی کی دل آزادی کرنانہیں بلکہ اس علاقہ کے لوگوں کواس کرب سے نجات دلاناہے جس کاوہ طویل عرصہ سے شکار ہیں ان کی مشکلات کم ہوسکیں سب سے پہلے لدڑپینڈروڈ پرچیچیاں چوک کے نالہ پرپلی کی تعمیر کامسئلہ ہے جوفوری طورپرحل ہوناچاہیے لوگوں نے ایک طویل عرصہ تک تکالیف کاسامناکیاہے اورکررہے ہیں اب وہ زیادہ عرصہ یہ تکالیف برداشت نہیں کرپائیں گے ان سطور میں حلقہ نمبر2 چکسواری اسلام گڑھ کی ساری سیاسی قیادت سے پرزور مطالبہ ہے کہ وہ اس طرف بھی توجہ فرمائیں اگرچہ حلقہ نمبردوچکسواری کے اوربھی مسائل ہیں مگران میں سب سے اہم مسئلہ اس علاقہ میں پلی کی تعمیر اورآدھ پلائی لدڑ پینڈاروڈ کی مرمت وپختگی ہے ایک دن اس طرف تشریف لائیں اوران لوگوں کودرپیش مشکلات کامشاہدہ کریں اورپھرفیصلہ کریں کہ ان لوگوں کے یہ اہم مسائل فوری غورطلب اورحل طلب ہیں یانہیں اس علاقہ کے بھٹہ خشت کے مالکان کوبھی ان مسائل کے حل کے لئے اپنارول ادکرناچاہیے ان کاکاروباربھی اہم ہے پلی اورسڑک تعمیر ہوگی توان کے کاروبار میں بھی مزیداضافہ ہوگا پلی اورسڑک کی مرمت سے سکول کے طلبہ وطالبات اورعوام علاقہ کوجوراحت اورسکون ملے گااس کے بدلے میں جووہ دعائیں دیں گے وہ عوامی نمائندگی کاحق اداکرنے والے کے عزت وقار اورشہرت میں اضافہ سبب بنیں گی اب دیکھنایہ ہے کہ یاس نیکی کے کام کی سعادت کس کے حصہ میں آتی ہے۔

  • Reported By: Hafiz Sher Yar Bismal

  • Article on child abuse crisis

    وہ جنسی در ندہ کیوں بنا۔ تحریر:راءو عمران سلیمان۔

    معصوم بچیوں سے ہونے والی زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات سے معلوم ہوتا ہے کہ معاشرے میں کس قدر گراءوٹ بڑھ چکی ہے،ان واقعات کے بعد جو خیال دل میں جنم لیتاہے وہ یہ ہے کہ جو لوگ اس قسم کے واقعات میں ملوث ہوتے ہیں آخرایسے لوگوں کو سرعام پھانسی پر لٹکایا کیوں نہیں جاتا;238;۔ پہلے تو سوال یہ بنتا ہے کہ اس قسم کے واقعات ہوتے ہی کیوں ہیں اور پھر اس طرف آئینگے کہ ان واقعات کو کیسے روکا جاسکتاہے۔ جب بچہ پیدا ہوتاہے تب تمام لوگ ہی اسے پیار کرتے ہیں گود میں لیتے ہیں اسے چومتے ہیں یہ وہ لمحہ ہوتاہے جب یہ بات کسی کو بھی معلوم نہیں ہوتی کہ یہ بچہ بڑاہوکر ڈاکٹر بنے گا،پائلٹ بنے گا یا پھرا اس ملک کا لیڈر بنے گا۔ جبکہ یہ بھی کوئی نہیں جانتاہے کہ یہ ہی بچہ بڑاہوکر ایک ایک ایسا اسکینڈل کھڑاکریگا جسے لوگ جنسی درندگی کا نام دینگے یعنی ثابت ہوا کہ کوئی بھی جنسی درندہ ماں کے پیٹ سے ہی ایسا پیدا نہیں ہوتابلکہ اس میں اس کاماحول اس کی پرورش،یعنی معاشرہ اور اس کے ساتھ سرکار کا بھی اتنا ہی ہاتھ ہوتاہے۔ اب سرکار کا کیسے ہاتھ ہوتاہے یہ میں اس تحریر کے آخر میں بیان کرونگا۔ بہت چھوٹے بچے باہر گلی محلوں میں صرف ان ہی لوگوں کے ساتھ نکلتے ہیں جنھیں وہ جانتے ہیں اس میں کوئی عزیز یا محلے دار بھی ہوسکتاہے جسے بچے اپنے گھر میں بھی پاتے ہیں اور گھر کے دروازے پر بھی اور نفسیاتی طورپر بچے ایسے شخص کے ساتھ گھروں سے باہر نہیں جاتے جنھیں وہ جانتے نہیں ہیں مشکوک آدمی سے جسقدر معصوم بچے سہمتے ہیں کسی بڑے کو اس کا سامنانہیں ہوتا اگر کوئی انجان آدمی ایسا کریگا تو یقیناً وہ زبردستی ہی ایسا کریگا۔ اس کے لیے یہ احتیاط بھی بہت ضروری ہے اس میں چاہے کوئی اپنا ہویا پھر محلے دار احتیاط ان واقعات کے بعد اب بہت ضروری عمل بن چکاہے بعض دفعہ تو ایسا بھی ہوتاہے کہ محلے میں کچھ مشکوک کردارکے حامل لوگوں کو اگر پولیس کے حوالے کربھی دیاجائے تو اس کے دوست اور رشتے دار اسے پولیس سے چھڑوالاتے ہیں جس سے اس مشکوک آدمی کا رعب اور دبدبہ مزید بڑھ جاتاہے اور ایک درندہ مکمل آزادہوتاہے اس میں بھی قصورمعاشرے پر جاتاہے،دوسرا معاشرے میں پھیلی بے راہ روی،موبائل فون میں موجود فحش مواد،انٹرنیٹ کے زریعے زہنی خرابیاں بھی اسی معاشرے سے ایک انسان میں منتقل ہوتی ہیں اور اس کے لیے ضروری نہیں کہ ایک آدمی جس کی شادی کی عمر نکل رہی ہوتو وہ اپنی نفسانی خواہشات کی تکمیل کے لیے بھی ایسا کرتاہے بلکہ ایسے واقعات تو وہ درندہ صفت لوگ بھی کرگرزتے ہیں جو شادی شدہ ہوتے ہیں اور خود کئی کئی بیٹیوں کے باپ ہوتے ہیں میں ایسے کئی لوگوں کو جانتاہوں جن کی اپنی کئی جوان بیٹیاں ہیں مگر جب وہ کسی محفل میں جاتے ہیں تو ان کی نگاہوں میں جو درندگی ہوتی ہے وہ کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہوتی چہرے پر رکھی داڈھی یا پھر بہترین پینٹ کوٹ اس شخص کو مہذب تو بنادیتے ہیں مگر اس کی زہنی درندگی کو نہیں مٹاسکتے ایسے لوگ اپنے گھروں میں اپنی بیگمات کو فون کرکے پوچھ رہے ہوتے ہیں کہ بیٹیوں پر نگاہ رکھو انہیں کہیں آنے جانے نہ دینا۔ مگر کسی دوسرے کی بہن اور بیٹی اس شخص کی نگاہ سے ایک لمحے کے لیے بھی محفوظ نہیں ہوتی یعنی آپ دوسرے اینگل سے ایک انسان کی غیرت کا اندازہ لگاسکتے ہیں کہ جب وہ بازار میں اپنی بہن اور بیوی کے ساتھ جاتاہے تو اس کی نظریں اس جانب مرکوزرہتی ہے کہ کوئی میری بیوی یا بہن کو تو نہیں دیکھ رہامگر جب وہ اکیلا ہوتاہے تو یہ ہی سارے کام خود کرگزرتاہے۔ ہم لفظ مکافات عمل کو بھول کرجب زندگی گزارتے ہیں تو معاشرہ اس درندگی کو خود بہ خود جنم دیدیتاہے،دوسراہم دیکھتے ہیں کہ موجودہ معاشرے میں بہت سی ایسی خواتین بھی ہوتی ہیں جن کے لباس ایسے ہوتے ہیں جس کو پہنے کے لیے ہمارا اسلام کسی بھی لحاظ سے اجازت نہیں دیتابازاروں میں سرعام کھلے گلے اور چست قسم کے لباس پہن کر اگر کسی مرد کو یہ کہا جائے کہ فلاں آدمی مجھے گھور رہاہے تو اس پرکیا تبصرہ کیاجاسکتاہے۔ یعنی موجودہ دور میں ایک عا م آدمی کو فحاشی، ٹیکنالوجی اور دیگر بے راہ رویوں کے واقعات نے اس قدر الجھا دیاہے کہ اس قسم کے حادثات اب معمول بنتے جارہے کہ کہیں کسی معصوم فرشتہ کو جنسی درندگی کا نشانہ بنادیاجاتاہے تو کہیں قصور کی زینب کی عزت کو لوٹ لیا جاتاہے،ہر باپ اور ہر ماں یہ ہی چاہتی ہے کہ اس کے بچے اس قسم کے دردناک واقعات سے محفوظ رہیں بعض اوقات بہت سے ماں باپ بھرپور تحفظ اور مشکوک افراد پر نظریں رکھنے کے باوجود بھی اس قسم کے حادثات کا شکارہوجاتے ہیں کیونکہ ایسے لوگ جب باہر کی دنیا میں مشکوک لوگوں پر نظریں رکھتے ہیں تو اکثر یہ بات بھول جاتے ہیں کہ ان کے اپنے ہی گھر میں ایسے جنسی درندے موجود ہیں جن پر اندھا بھروسہ ان کو لے ڈوبتاہے،ان میں سے کراچی میں ایک دل ہلادینے والا واقعہ جس میں ایک سگے باپ نے اپنی ہی معذور بچیوں کو ہوس کا نشانہ بنادیا تھا اب کوئی بتائے کہ کسی دوسرے پر کیا نگاہ رکھی جاسکتی۔ یعنی اس نفسانی در ندگی کو انسانی رگوں سے نکالے بغیر کسی بھی لحاظ سے کمی نہیں لائی جاسکتی اس میں پولیس بھی کیا کسی کی مددکریگی،پنجاب کے ایک نواحی علاقے میں ایک ماں اور بہن جب اپنے بیٹے کو کسی جھگڑے کے کیس میں تھانے سے چھڑوانے کے لیے آئی تو موقع پر موجود ایک ایس ایچ او اور دیگر پولیس اہلکار ان خواتین کو ڈراتے رہے کہ تمھارا بچہ جیل چلاجائے گا اس پر مقدمہ چلے گا اوراسے لمبی سزاہوگی اس پر جب لڑکے کی ماں اور بہن پولیس کے ترلے منتیں کرتی ہیں تو قانون اورلوگوں کی عزت کے رکھوالوں کی نیت خراب ہوجاتی ہے جس پر وہ اپنی شرط کو اپنی جنسی درندگی سے مشروط کردیتے ہیں یعنی اگر ماں اور بیٹی ایک رات پولیس والوں کے مہمان بن جائیں تو اس لڑکے کو تھانے سے جانے کی اجازت مل سکتی ہے۔ اب یہ تو ہوئی پولیس اور تھانے والوں کی ذمہ داریاں بتانے والی بات یہ ہے کہ یہ عمل بھی اسی معاشرے کا حصہ ہے یعنی اگر محلہ کمیٹیوں میں پولیس کے لوگوں کو بھی ڈال دیاجائے تو لوگوں کی عزتیں جہاں محلوں میں محفوظ نہیں وہاں پولیس کا واقعہ بھی اوپر بیان کیا جاچکاہے۔ اس قسم کے واقعات سے بچ کر جائیں توآخر کہاں جائیں۔ مگر اس کا مطلب یہ نہیں کہ اچھے پولیس اہلکار موجود نہیں اور معاشرے میں سبھی لوگ درندے ہیں سوال تو بس یہ ہے کہ ان کی پہچان کرنا مشکل ہوچکاہے، ضروری ہے کہ اپنے اردگر خود بھی مشکو ک لوگوں پر نظر رکھی جائی بچوں کا خیال رکھاجائے جدید ٹیکنالوجی کی مدد لی جائے اس میں کیمروں کا استعمال شامل ہے، اس سے بہت حد تک ان واقعات میں کمی لائی جاسکتی ہے۔ دوسری جا نب کچھ لوگ زہنی پریشانیوں کی وجہ سے بھی اس قسم کے واقعات کوکرگزرتے ہیں، جن میں نفسانی خواہشات کا بڑھنا، علیحدگی میں رہنا،بے روزگاری کا ہونا اور کسی بھی قسم کی کوئی مصروفیت کا زندگی میں نہ ہونا،یعنی اگر کسی انسان کے پاس کوئی مصروفیت ہے تو وہ اس قسم کے کاموں کی جانب نہیں آئیگا اس کی زندگی نا امیدی کا شکا رنہیں ہوگی وہ جب مصروف ہوگا تو فسٹریشن سے دور ہوگا،یہاں پر آکر ریاست قصور واربن جاتی ہے جس کا زکر اوپر کیا گیا کہ اس میں حکومت کا بھی اتنا ہی کردارہے یعنی جب سرکار اپنی عوام کو صحت دے گی،اچھی تعلیم دیگی بے روزگاروں کو روزگار ملے گا پڑھے لکھے لوگوں کو نوکریاں ملیں گی تو ایسے لوگوں میں بہتر مستقبل کا ایک پلان ہوگا ان کے زہنوں سے مایوسی اورنا امیدی ختم ہوجائے گی یہ ہی نہیں وہ انسان جنسی درندگی سے دور رہے گا ایک بے روزگار اور مایوسیوں کا شکار نوجوان دہشت گردوں کے ہاتھوں بھی اسی سوچ سے کھلواڑ بن جاتاہے جو ہر وقت سوچتاہے کہ کیا کروں ;گھر میں جوان بہنیں ہیں جن کی شادی کرنی ہے،ماں کی دوائیں ہیں چھوٹے بہن بھائیوں کی اسکولوں کی فیسیں ہیں۔ چوری کروں جیب کاٹوں، ڈاکہ ڈالوں،یا پھر کسی کی عزت پر ہاتھ ڈالوں. یہ وہ پوائنٹس ہے جس کو پوراکرنا کسی بھی معاشرے کی نہیں بلکہ ایک ریاست کی ذمہ داری ہے۔ آپ کی فیڈ بیک کا انتظارہے گا۔

  • Reported By: admin


گزشتہ دنوں کی خبریں ..
Previous Days News